Al Rahmat Trust – Waqf Qurbani – 2015


نفل قربانی ک حوالے سے ہفت روزہ القلم سے ایک مؤثر تحریر مقام محبت – رنگ و نور – سعدی کے قلم سے
نفل قربانی کی تفصیلات مضمون کے آخر میں ملاحظہ فرمائیں۔

Rangonoor 510 - Saadi kay Qalam Say - Maqam e Muhabbat

مقامِ محبت

رنگ و نور ۔۔۔سعدی کے قلم سے (شمارہ 510)

اللہ تعالیٰ اپنے بندوں کو شیطان کے سامنے رسوا نہیں فرماتے…

سُبْحَانَ اللّٰہِ وَبِحَمْدِہٖ سُبْحَانَ اللّٰہِ الْعَظِیمْ

ایک سچا واقعہ

ایک صاحب کو اللہ تعالیٰ نے ’’قربانیوں‘‘ کا شوق نصیب فرمایا ہے… فرائض کے بعد نفل عبادت کی کثرت یہ ’’محبت ‘‘ کی علامت ہے… ایک سال ایسا ہوا کہ پیسے کم پڑ گئے…جتنی قربانیوں کا ارادہ تھا وہ تو بہت مشکل…اپنی واجب قربانی کے معاملہ میں بھی تنگی آ رہی تھی…دل میں خوف آیا کہ اس سال عید کا موسم نہیں کما سکیں گے …مگر پھر بھی عزم باندھے رہے کہ دینے والا بھی اللہ…قبول فرمانے والا بھی اللہ…ایک دن مغرب کی نماز کے لئے مسجد میں حاضر ہوئے … امام صاحب نے سورۃ الکوثر پڑھی… جیسے ہی ’’ وَانْحَرْ‘‘ کا لفظ آیا ان صاحب کے دل پر اُتر گیا…

فَصَلِّ لِرَبِّکَ وَانْحَرْ

’’پس آپ اپنے رب کے لئے نماز ادا کریں ’’وَانْحَرْ‘‘ اور قربانی کریں‘‘

’’وانحر‘‘ کا لفظ اصل میں اونٹ کی قربانی کے لئے آتا ہے…ویسے ہر قربانی اس میں شامل ہے… اونٹ کی ہو یا گائے، بھینس، بکری کی… ان صاحب کو لگا کہ …انہیں اونٹ کی قربانی کی طرف متوجہ کیا گیا ہے…نماز کے بعد ہاتھ پھیلا دئیے کہ…یا اللہ ’’وَانْحَرْ ‘‘ آپ کا حکم ہے… یہ حکم پورا کرنے کی توفیق عطاء فرما دیجئے… اب شیطان نے قہقہے لگائے کہ…بکرے اور گائے کی رقم نہیں اور دعاء چل رہی ہے اونٹ کی… طرح طرح کے وسوسے اور خیالات… مگر عزم اللہ تعالیٰ کے لئے تھا…جو عزم اللہ تعالیٰ کے لئے ہوتا ہے اس کی ایک بڑی علامت یہ ہے کہ…بندہ اس کی توفیق صرف اللہ تعالیٰ سے مانگتا ہے… ایسا نہیں کہ حج کا شوق ہوا تو اب ہر کسی کے سامنے آہیں بھرتے رہیں …تاکہ کوئی بھیج دے… قربانی کا شوق ہوا تو ہر کسی کو بتاتے پھریں تاکہ کوئی کرا دے …یہ شوق نہیں ہوتا،شوق فروشی ہوتی ہے… اللہ تعالیٰ ہم سب کی حفاظت فرمائے…

اب ہر سال کی قربانیوں کے ساتھ…اونٹ بھی جوڑ لیا… اللہ تعالیٰ کی رحمت متوجہ ہوئی … سارا انتظام فرما دیا…تمام قربانیاں بھی ہو گئیں اور اونٹ بھی قربان ہوا… بے شک اللہ تعالیٰ کے خزانے بے شمار ہیں… اور اللہ تعالیٰ اپنے بندوں کو شیطان کے سامنے رسوا نہیں فرماتے…

سُبْحَانَ اللّٰہِ وَبِحَمْدِہٖ سُبْحَانَ اللّٰہِ الْعَظِیمْ

نفل قربانی

ایک سے زائد جو قربانی کی جاتی ہے… وہ نفل قربانی ہے… اور نفل سے اللہ تعالیٰ کی قریبی محبت نصیب ہوتی ہے…نفل قربانی کا عمل خود حضرت آقا مدنیﷺ نے شروع فرمایا…آپ ہمیشہ دو مینڈھے سینگوں والے ذبح فرماتے تھے …حج کے موقع پر تو آپﷺ نے ایک سو اونٹ قربان فرمائے…

حضرت سیدنا علی المرتضیٰ رضی اللہ عنہ … ہمیشہ دو دنبے ذبح فرماتے… ایک حضرت آقا مدنیﷺکی طرف سے اور ایک اپنی طرف سے …کیا ہی اچھا ہو کہ مسلمانوں میں بھی اس کا ذوق پیدا ہو… اس سال کوشش کریں کہ ایک بکرا، یا ایک حصہ… حضرت آقا مدنیﷺ کی طرف سے اللہ تعالیٰ کے حضور قربان کریں… ایک منحوس ٹچ فون کی قیمت میں…یہ بابرکت کام ہو سکتا ہے… ہماری جماعت اس سال نفل قربانی جمع کر رہی ہے … حضرت آقا مدنیﷺ کی طرف سے جو قربانی کریں… وہ جماعت میں دے دیں… معلوم نہیں کہاں کہاں تک وہ پہنچے گی…حضرت محمد ﷺ کی قربانی،جیشِ محمدﷺکے ذریعہ… اُمتِ محمدﷺ کے خاص اَفراد تک…

مقام محبت

یہ ایک حدیث قدسی ہے… اسے ’’حدیث الٰہی‘‘ بھی کہتے ہیں… یعنی اللہ تعالیٰ کی بات، اللہ تعالیٰ کا فرمان… یہ وہ حدیث ہوتی ہے جو حضور اقدسﷺ …اللہ تعالیٰ کی طرف سے ان کی طرف نسبت کے ساتھ بیان فرماتے ہیں…حضور اقدسﷺ نے ارشاد فرمایا… اللہ تعالیٰ ارشاد فرماتے ہیں:

من عادی لی ولیا فقد آذنتہ بالحرب

جو میرے کسی ولی کے ساتھ دشمنی کرتا ہے تو میں اس کے ساتھ دشمنی کا اعلان کرتا ہوں… یعنی جو اللہ تعالیٰ کے کسی ولی …یا اولیاء سے بغض رکھے، انہیں ستائے تو ایسے بد نصیب انسان کے لئے اللہ تعالیٰ کی طرف سے اِعلان جنگ ہے…

وما تقرب الیّ عبدی بشیئٍ احب الی مما افترضت علیہ

میرا بندہ جن چیزوں کے ذریعہ میرا قرب حاصل کرتا ہے… ان چیزوں میں میرے نزدیک سب سے محبوب ’’فرائض ‘‘ ہیں…یعنی اللہ تعالیٰ کے قرب کا سب سے اہم ذریعہ… فرائض کی پابندی اور فرائض کا اہتمام ہے… اور فرائض کے برابر اور کوئی عمل نہیں ہو سکتا…

وما یزال عبدی یتقرب الیّ بالنوافل حتی اُحبہ

اور میرا بندہ نفل عبادت کے ذریعہ برابر میرا قرب حاصل کرتا رہتا ہے…یہاں تک کہ میں اس سے محبت فرمانے لگتا ہوں…یعنی فرائض کے بعد میرے مخلص بندے مجھے راضی کرنے کے لئے … اور میرا قرب پانے کے لئے مستقل نوافل میں لگے رہتے ہیں…نفل نماز، نفل صدقہ، نفل قربانی، نفل حج، عمرہ وغیرہ یہاں تک کہ وہ میرے محبوب بن جاتے ہیں…سبحان اللہ! عجیب الفاظ ہیں… پڑھتے جائیں تو دل پر وجد طاری ہو جاتا ہے… اللہ تعالیٰ کی محبت مل جائے تو انسان کو اور کیا چاہیے…

آگے ارشاد فرمایا:

فاذا احببتہ کنت سمعہ الذی یسمع بہ، وبصرہ الذی یبصر بہ، ویدہ التی یبطش بھا، ورجلہ الذی یمشی بھا…

جب میں اس سے محبت کرتا ہوں تو اس کے کان، آنکھیں، ہاتھ اور پاؤں میری خاص نگرانی اور رہنمائی میں آ جاتے ہیں…یعنی اس کے لئے خیر کے بے شمار دروازے کھل جاتے ہیں…اس کا سننا ،دیکھنا، پکڑنا اور چلنا سب کچھ عبادت بن جاتا ہے …اور اس کے جسم کے اعضاء گناہوں سے محفوظ ہو جاتے ہیں…

آگے ارشاد فرمایا:

وان سألنی لأعطینہ

وہ اگر مجھ سے کچھ مانگے تو میں ضرور عطا فرماتا ہوں

ولئن استعاذنی لأعیذنہ

اور اگر کسی چیز سے میری پناہ مانگے تو میں اسے اس چیز سے ضرور بچا لیتا ہوں  ( صحیح بخاری)

اندازہ لگائیں کہ… فرائض پورے کرنے کے بعد نفل عبادت کا کیا مقام ہے…اسی کو ہم ’’مقام محبت‘‘ سے تعبیر کر رہے ہیں…زمانے میں جو بھی بڑے اور کامیاب لوگ گزرے انہوں نے اسی مقام محبت سے بلندی حاصل کی… فرض نمازیں تو سب روزانہ پانچ ہی ادا کر سکتے ہیں… کسی کو چھ کی اجازت نہیں… مگر جنہوں نے نفل عبادت کو اپنایا وہ…مقام محبت تک جا پہنچے… عام حالات میں دیکھ لیجئے… جو ملازم اپنی اصل ملازمت سے زیادہ… پانچ دس منٹ بھی محنت کرتا ہو تو مالک کی آنکھ کا تارا بن جاتا ہے… جو دکاندار پانچ دس روپے کی معمولی رعایت دیتا ہو…اس کے ہاں گاہکوں کی بھیڑ لگ جاتی ہے…

اپنی اصل ذمہ داری سے زائد محنت انسان کو مقبول، محبوب اور قیمتی بنا دیتی ہے…

فرائض ہماری اصل ذمہ داری ہیں… اس کو پورا کرنے کے بعد …نفل کے ذریعہ مقامات کا حصول ہے…اور یہ نفل قیامت کے دن بڑے کام آئیں گے…جب اللہ جَلَّ شانُہ فرشتوں سے فرمائیں گے:

میرے بندے کے اعمال دیکھو! کیا ان میں نفل عبادت ہے؟ … اگر نفل عبادت ہو گی تو اس سے فرائض کی کمی کوتاہی کا ازالہ کیا جائے گا…

ذوالحجہ کا مہینہ شاندار ہے… عشرہ ذی الحجہ کے مقبول اعمال کا موسم ہے… اور نفل قربانی عام صدقے سے بھی افضل ہے… مال آتا جاتا رہتا ہے… کیا معلوم دوبارہ یہ دن نصیب ہوں یا نہ … سب سے پہلے اپنی واجب قربانی بہت شوق، خوشی اور اِخلاص سے ادا کریں…اورپھر ایک،دویا زیادہ نفل قربانیوں کے ذریعہ ’’مقام محبت‘‘ حاصل کریں… دل میں ذوق اور جذبہ ہو گا تو اسباب خود مہیا ہو جائیں گے ، ان شاء اللہ

مبارک کڑیاں

نفل اعمال میں سب سے افضل عمل ’’صدقہ‘‘ ہے… اور سب سے افضل صدقہ ’’کھانا کھلانا‘‘ ہے… اور کھانے میں سب سے افضل گوشت اور اس کا شوربہ ہے… کبھی ہمت ہو تو ایک دنبے کے بال شمار کریں…  چلیں پورا دنبہ نہیں صرف اس کے سر کے بال شمار کر لیں… قربانی میں ہر ایک بال کے بدلے ایک نیکی ملتی ہے… ضروری اعمال میں سب سے افضل عمل جہاد فی سبیل اللہ ہے… اب یہ نفل قربانی اگر ’’جہاد فی سبیل اللہ‘‘ میں لگ جائے گی تو اندازہ لگائیں… آپ نے کتنی عظیم فضیلتوں کو پا لیا…

جہاد فی سبیل اللہ کا عظیم فریضہ …مختلف کڑیوں سے جڑتا ہے… اور ان میں سے ہر کڑی مبارک ہے… اور بعض اَوقات اَفراد کے اِخلاص کی وجہ سے…کوئی کڑی زیادہ مقبولیت کے خاص مقام پر ہوتی ہے… سب سے پہلے دعوت کی کڑی ہے… کچھ اَفراد… دوسرے مسلمانوں کو جہاد کی دعوت دیتے ہیں… اب دوسری کڑی تعلیم و تربیت کی ہے… ایک مسلمان جماعت اور جہاد سے متعارف ہو کر آ گیا…اب اس کو جہاد سے جوڑنا ہے، اسے جہاد سکھانا اور سمجھانا ہے…دورہ تربیہ، اساسیہ اور تفسیر… اب اگلی کڑی ریاضت اور تربیت کی ہے… اس اللہ کے بندے کو یہ تربیت دینی ہے کہ اس نے کس طرح سے لڑنا ہے… اب اگلی کڑی رباط کی ہے… اس بندے کو محاذ تک پہنچانا ہے… اور اب آخری کڑی… خود محاذ کی ہے کہ…اس بندے کو اللہ تعالیٰ کے دشمنوں کے سامنے لا کھڑا کرنا ہے…ہر کڑی بہت ضروری … اور ہر کام بہت مبارک ہے…

بعض اوقات پچھلی کڑیوں والے آگے کی کڑیوں سے زیادہ مقرب بن جاتے ہیں…بات اِخلاص اور اِطاعت امیر کے ساتھ جڑی ہوئی ہے … جماعت کے بیت المال کی ’’ نہر‘‘ ان سب کڑیوں کو سیراب کرتی ہے… انہیں چلاتی ہے … اب جس خوش نصیب نے اپنے پانی کی بالٹی اس نہر میں ڈال دی…اسے سب کڑیوں میں شرکت کا اجر وثواب مل گیا… اور اگر اس کا اِخلاص کامل ہے تو اس کا پانی… وہاں پہنچے گا جہاں قبولیت اُس وقت سب سے بڑھ کر ہو گی… نفل قربانی کے ذریعہ…اس بابرکت نہر میں اپنا حصہ ڈالیں … اور قربانی کی کھالوں کے ذریعہ بھی اس مبارک سلسلے کو مضبوط کریں…ان شاء اللہ بہت کام آئے گا … بہت کام ان شاء اللہ

لا الہ الا اللّٰہ، لا الہ الا اللّٰہ ،لا الہ الا اللّٰہ محمد رسول اللّٰہ

اللہم صل علی سیدنا محمد وآلہ و صحبہ وبارک وسلم تسلیما کثیرا کثیرا

لا الہ الا اللّٰہ محمد رسول اللّٰہ

٭…٭…٭

Al Rahmat Trust - Waqf Qurbani - 2015

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s